BN

سپریم کورٹ



جسٹس فائز، جسٹس آغا ریفرنسز سماعت آج،بینچ پر اعتراض کا امکان

منگل 17  ستمبر 2019ء
اسلام آباد(خبر نگار)سپریم کورٹ کے جج جسٹس قاضی فائز عیسٰی اور سندھ ہائی کورٹ کے جج جسٹس کے کے آغا کیخلاف صدارتی ریفرنسز کے بارے میں آئینی درخواستوں کی سماعت آج ہوگی۔جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں جسٹس مقبول باقر،جسٹس منظور احمد ملک،جسٹس سردار طارق مسعود ،جسٹس فیصل عرب،جسٹس اعجاز الاحسن اور جسٹس مظہر عالم خان میاں خیل پر مشتمل 7 رکنی لارجر بینچ جسٹس قاضی فائز عیسٰی ،عابد منٹو،پاکستان بار کونسل،سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن اور صوبائی بارز کی طرف سے صدارتی ریفرنسز کیخلاف دائر آئینی درخواستوں پر سماعت کریگا۔صدارتی ریفرنسز کو بدنیتی پر مبنی قرار دے کر
مزید پڑھیے


جج ایمانداری سے فیصلہ دیتے ہیں،تبصرہ کرنے والی اکثریت اسے نہیں پڑھتی: چیف جسٹس

اتوار 15  ستمبر 2019ء
لاہور(جنرل رپورٹر)چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا ہے جج محنت کر کے ایمانداری سے فیصلہ دیتے ہیں، عدالتی فیصلوں پرتبصرہ کرنے والی اکثریت فیصلہ نہیں پڑھتی۔ مقامی ہوٹل میں معروف قانون دان ایس ایم ظفرکی کتاب کی تقریب رونمائی میں شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاتاریخ کی خوبصورتی یہ ہے کہ اسے اپنے انداز میں بیان کیا جا سکتا ہے ،جس دور سے ہم گزر رہے ہیں اس میں تاریخ بن نہیں رہی بلکہ حقائق اجاگرہورہے ہیں،تاریخ دان ہی ہمارے موجودہ دور کے بارے میں بتائیں گے ۔ ہمارے پاس بہترین ججزکام کررہے ہیں مگرتاریخ دان بتائیں
مزید پڑھیے


سپریم کورٹ :نجی تعلیمی اداروں کی فیسوں میں 2017ئ کے بعد اضافہ کالعدم ؛فیسیں بڑھائیں تو سخت کاروائی ہو گی:وزیر تعلیم

هفته 14  ستمبر 2019ء
اسلام آباد(خبر نگار،نامہ نگار) سپریم کورٹ نے نجی تعلیمی اداروں کی فیسوں کو ریگولیٹ کرنے سے متعلق پنجاب اور سندھ حکومت کے قوانین کو درست قرار دیتے ہوئے فیسوں میں جنوری 2017ئکے بعد اضافہ کالعدم کردیا ہے اور فیسوں کو جنوری 2017ء کی سطح پر منجمد کرکے حکم دیا ہے کہ مذکورہ تاریخ کے بعد فیسوں میں اضا فہ کیلئے تخمینہ لگا کر متعلقہ صوبوں کی ریگولیٹری اتھارٹی سے منظوری لی جائے ۔عدالت عظمٰی نے جمعہ کو فیسوں کے بارے میں مقدمے کا تفصیلی فیصلہ جاری کردیا جس میں قرار دیا کہ جنوری 2017کے بعد مجوزہ اضافہ کی منظوری مجاز
مزید پڑھیے


میڈیا پر پابندیاں جمہوریت کیلئے خطرہ، احتسابی عمل میں سیاسی انجینئرنگ کاتاثر خطرناک ہے :چیف جسٹس

جمعرات 12  ستمبر 2019ء
اسلام آباد،لاہور (خبرنگار،نامہ نگارخصوصی) چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے میڈیا پر پابندیوں اور اختلاف رائے کو دبانے کی کوشش پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اسے جمہوریت کیلئے خطرہ قرار دیا ہے جبکہ ملک میں جاری احتساب پر بھی سخت سولات اٹھائے ہیں ۔ چیف جسٹس نے کہا کہ از خود نوٹس اختیار کے استعمال کیلئے رہنما اصول آئندہ فل کورٹ میٹنگ تک وضع کر کے اس معاملے کو ہمیشہ کیلئے حل کرلیا جا ئیگا۔بدھ کو سپریم کورٹ میں نئے عدالتی سال کی تقریب کے دوران فل کورٹ سے خطاب کرتے ہوئے چیف جسٹس نے جسٹس قاضی فائز عیسٰی
مزید پڑھیے


سپریم کورٹ: نئے عدالتی سال کی تقریب کل،چیف جسٹس صدارت اٹارنی جنرل و دیگر خطاب کرینگے

منگل 10  ستمبر 2019ء
اسلام آباد(خبر نگار)سپریم کورٹ میں نئے عدالتی سال کل شروع ہوگااس حوالے سے پرنسپل سیٹ اسلام آباد میں تقریب منعقد ہوگی ۔تقریب کو ویڈیو لنک کے ذریعے چاروں برانچ رجسٹریوں ،لاہور،کراچی ،پشاور اور کوئٹہ میں براہ راست دکھایا جائیگا۔نئے عدالتی سال کی تقریب 11ستمبر کو دن ساڑھے 11 بجے پرنسپل سیٹ اسلام آباد پر منعقد کی جائے گی۔جس کی صدارت چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کرینگے ۔تقریب میں سینئر وکلا بھی شرکت کریں گے جبکہ تقریب سے اٹارنی جنرل،سپریم کورٹ بار کے صدر اور پاکستان بار کونسل کے وائس چیئرمین بھی خطاب کرینگے ۔
مزید پڑھیے




صنعتکاروں کو 208 ارب معافی کا آرڈیننس واپس لینے کا فیصلہ، سپریم کورٹ سے رجوع کیا جائے : وزیراعظم

جمعرات 05  ستمبر 2019ء
اسلام آباد(سپیشل رپورٹر؍خصوصی نیوز رپورٹر؍ مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے گیس انفراسٹرکچر ڈیویلپمنٹ سیس (جی آئی ڈی سی) کے حوالے سے صدارتی آرڈیننس واپس لینے اور سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کی ہدایت کردی ۔ترجمان وزیراعظم آفس کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے حالیہ تنازع پر شفافیت یقینی بنانے کیلئے آرڈیننس واپس لینے کا فیصلہ کیا اور اٹارنی جنرل کو جی آئی ڈی سی معاملے پر سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کی ہدایت کی ۔ترجمان کے مطابق آرڈیننس کا مقصد عدالت کے باہر مذاکرات کے ذریعے 50 فیصد رقم وصول کرنا تھا۔وزیر اعظم آفس نے کہا ہے کہ وزیراعظم
مزید پڑھیے


کیسے ممکن ہے مجرم دیت دیکر بری ہو اور پولیس میں بھرتی ہوجائے ؟سپریم کورٹ

منگل 03  ستمبر 2019ء
اسلام آباد(خبر نگار)سپریم کورٹ نے دیت دیکر بری ہونے کے بعد پولیس میں بھرتی ہونے والے مجرم کے کیس میں قانونی نقطہ اٹھا یا ہے کہ یہ کیسے ممکن ہے کہ مجرم دیت دے کر بری ہو اور پھرپولیس میں بھرتی ہوجائے ؟جسٹس اعجازالاحسن کی سربراہی میں جسٹس منیب اختر پر مشتمل2 رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی ۔ دوران سماعت ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہاکہ اس حوالے سے مختلف مقدمات موجود ہیں جس پر جسٹس اعجاز الاحسن نے کہاکہ یہ دلچسپ بات ہے کہ ملزم نے جرم کے بعد رقم ادا کی اور سمجھوتہ ہوگیا ،ایسے تمام مقدمات
مزید پڑھیے


6072ہائوسنگ سوسائٹیاں غیررجسٹرڈ رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع

اتوار 01  ستمبر 2019ء
اسلام آباد (خبرنگار )ایف آئی اے نے ہائوسنگ سوسائٹیز کے فرانزک آڈٹ کی رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرا دی جس میں ملک کے بڑے شہروں میں پائی جانے والی جعلی غیر رجسٹرڈاور خلاف ضابطہ ہاؤسنگ سوسائٹیوں کے خلاف کاروائی کی استدعا کی گئی ہے ۔ایف آئی اے نے بتایا کہ ملک میں رجسٹرڈ سوسائٹیز کی تعداد 3720 جبکہ غیر رجسٹرڈ سوسائٹیوں کی تعداد 6072 تک پہنچ گئی ہے اور ان غیر رجسٹرڈ سوسائٹیز میں سے 1716 نے رجسٹریشن کیلئے درخواستیں دی ہیں ۔
مزید پڑھیے


سپریم کورٹ:زیر زمین پانی کی قیمت مقررکرنے کیلئے صوبوں کو4ہفتے میں قانون سازی کاحکم

منگل 27  اگست 2019ء
اسلام آباد(خبر نگار)سپریم کورٹ نے عدالتی فیصلے پرعملدرآمد کے مقدمے میں زیرزمین پانی کے استعمال کی یکساں قیمت مقررکرنے کیلئے صوبوں کو4ہفتوں میں قانون سازی کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیدیاہے ۔جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے کیس کی مزید سماعت چار ہفتے کیلئے ملتوی کرتے ہوئے قرار دیا کہ عدالتی حکم صرف منرل واٹرکمپنیوں کیلئے نہیں بلکہ کمرشل استعمال کے دیگر معاملات بھی شامل ہیں۔ بنچ سربراہ نے ایڈووکیٹ جنرلز سے استفسارکیا کہ عدالتی حکم کی روشنی میں زیرزمین پانی کے استعمال کی لاگت کی وصولی کیلئے ابتک کیااقدامات
مزید پڑھیے


جسٹس عظمت سعید آج ریٹائر، طاہرہ صفدر کو سپریم کورٹ لانیکا امکان

منگل 27  اگست 2019ء
اسلام آباد (غلام نبی یوسف زئی)سپریم کورٹ کے جج جسٹس شیخ عظمت سعید آج 65سال کی عمر کی آئینی حد تک پہنچنے کے بعد عہدے سے سبکدوش ہوجائیں گے جبکہ خالی ہونے والی نشست پر چیف جسٹس بلوچستان ہائی کورٹ جسٹس سیدہ طاہرہ صفدر کو لائے جانے کا امکان ہے ۔جسٹس عظمت سعید کے اعزازمیں آج فل کورٹ ریفرنس کورٹ روم نمبر ایک میں ہوگا جس میں اٹارنی جنرل ،عدالتی افسران ، سٹاف ، وکلاشریک ہوں گے ۔جسٹس شیخ عظمت سعیدنے یکم جون 2012ئکو عدالت عظمی کے جج کے طور پر حلف اٹھا یا، وہ ایک بار30جولائی سے 3اگست 2019ئتک
مزید پڑھیے