Common frontend top

امتیاز احمد تارڑ


قومی اسمبلی کے ابتدائی 100 دن!


پاکستان کی 16 ویں قومی اسمبلی کے 100 دن مکمل ہونے پر فافن نے رپورٹ جاری کی ہے، جو اس قانون ساز ادارے سے وابستہ امیدوں پر سوالیہ نشان لگا رہی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے: کہ قومی اسمبلی کے 100 دن مکمل ہوچکے ہیں،ان سو دنوں میں وزیراعظم شہباز شریف نے صرف 2 اجلاسوں میں شرکت کی ہے اور ان کی شرکت کا تناسب 10 فیصد رہا ہے ۔ جب کہ گزشتہ اسمبلی میں اسی مدت کے دوران بانی پی ٹی آئی کی حاضری کا تناسب 29 فیصد تھا۔اس کے علاوہ قومی اسمبلی کے ابتدائی 100 ایام میں
اتوار 16 جون 2024ء مزید پڑھیے

تاریخی لمحہ:23معاہدوں پر دستخط!

اتوار 09 جون 2024ء
امتیاز احمد تارڑ
چینی کہاوت ہے :بھوکے کو مچھلی نہ دو بلکہ اسے مچھلی پکڑنا سیکھائوتاکہ نہ صرف وہ خود مچھلی کھائے بلکہ اسے فروخت کر کے اچھا روزگار بھی کمائے ۔ چین پاکستان کا ایک ایسا دوست ہے ،جو اسے شکار کرنا سیکھا رہا ہے ۔سی پیک کی اپ گریڈ کرنے پر اتفاق کیا گیا ہے ۔سی پیک کی اپ گریڈیشن سے نہ صرف پاکستانی عوام کی سہولیات میں اضافہ ہو گا بلکہ انھیں مستقبل میں ایسے منصوبے خود بنانے میں بھی مہارت حاصل ہو گی ۔پاکستان ٹیکنالوجی میں پیچھے ہی نہیں بلکہ کافی پیچھے ہے ۔چین ہم سے بعد میں آزاد ہوا
مزید پڑھیے


کیا آزادکشمیر غیرملکی علاقہ ہے ؟

اتوار 02 جون 2024ء
امتیاز احمد تارڑ
اسلام آباد ہائیکورٹ میں شاعر احمد فرہاد کیس کی سماعت کے دوران ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے معاملے کو ختم کرنے کی استدعا کے ساتھ ہی یہ موقف اپنایا کہ احمد فرہاد کی گرفتاری کا معاملہ آزاد کشمیر کا ہے جو غیرملکی علاقہ ہے۔اٹارنی جنرل کون ہوتا ہے؟ آئین پاکستان میں اس کا کیا مقام ہے ؟اٹارنی جنرل پاکستانی آئین کے آرٹیکل 100 کے تحت مقرر کیا جاتا ہے جبکہ ایڈیشنل اٹارنی جنرل پاکستان کے مرکزی قانون افسران کے آرڈیننس 1970 ء کے تحت مقرر کیا جاتا ہے۔یہ حکومت کے قانونی مشیر ہوتے ہیںاورحکومتی موقف کو عدالت میں پیش کرتے ہیں۔اس
مزید پڑھیے


مولانا فضل الرحمن!

اتوار 26 مئی 2024ء
امتیاز احمد تارڑ
سر براہ جمعیت علمائے اسلام مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے : اگر ملک چھوڑنے کی نوبت آئی تو چھوڑ دیں گے لیکن اسٹیبلشمنٹ کے غلام نہیں بنیں گے۔ مجھے مولانا کے اس بیان نے حیران کر دیا ۔مولانا فضل الرحمن کی سیاسی بصیرت، حکمت کاری اورموسم شناسی کے بارے میں کچھ کہنا سورج کوچراغ دکھانے کے متراف ہے۔ان کا پاکستان کے سیاسی حالات سے اس قدر مایوس ہونا ،اس بات کی دلیل ہے کہ جمہوریت کو گھن لگ چکا ہے ۔مولانا جس جماعت کے سربراہ ہیں ،ا س جماعت کے قائدین نے ایک عہد کو شکست دی ہے، جس
مزید پڑھیے


’’تعمیر وطن کی راہیں ‘‘

اتوار 19 مئی 2024ء
امتیاز احمد تارڑ
شاہ ولی اللہ محدث دہلویؒ نے کہا تھا :فتوحات اور جنگیں ہی نہیں خانہ جنگیاں بھی سیاسی اور معاشی طور پر ریاست کو کمزور اور بالآخر ناکام بنا دیتی ہیں۔مملکت خداداد میں یہی کچھ ہو رہا ہے ۔سیاسی جماعتوں اور اسٹبلشمنٹ کی آپسی لڑائیوں نے ریاست کو کمزور کر دیا ہے ۔کئی دنوں سے ڈاکٹر حافظ محمد سلیم عثمانی صاحب نے ایک کتاب تھمائی ۔جس کے مصنف ایس ایم اشفاق صاحب ہیں ۔اس کتاب میں ملکی مسائل کی نشاندہی کی گئی ہے ۔ایس ایم اشفاق ایک کارباری شخصیت ہیں لیکن انھوں نے اپنے آپ کو خدمت خلق کے لیے وقف
مزید پڑھیے



دو انمول ستارے!

اتوار 28 اپریل 2024ء
امتیاز احمد تارڑ
بارہ برس ہوتے ہیں ،ون شانن روڈ پرایک شام سابق صدر پاکستان محمد رفیق تارڑ صاحب ؒ کے پاس بیٹھا ہو ا تھا ،آپ ختم نبوت اورسید عطا اللہ شاہ بخاری ؒ کے واقعات سنا رہے تھے ۔اچانک آپ نے ہندوستان کے چند لوگوں کے نام لیکر انھیں پڑھنے کی خاص تلقین کی ۔ان میں ایک نام مولانا سید انور شاہ کشمیری ؒ کے پوتے مولانا سید نسیم اختر شاہ قیصر کا نام تھا ۔ان کی تحریروں کو پڑھنا شروع کیا تو چودہ طبق روشن ہو گئے ۔خطابت میں ایک نام لکھنو کے مولانا عبد العلیم فاروقی ؒ کا تھا
مزید پڑھیے


نوارب ڈالر کی سعودی سرمایہ کاری!

اتوار 21 اپریل 2024ء
امتیاز احمد تارڑ
ترقی لڑائی سے نہیں ،غور و فکر اور ترجیحات کے تعین سے ہوتی ۔حکومت پاکستان جس سمت چل کھڑی ہوئی ،وہ راستہ ترقی ،سرمایہ کاری اور بلندی کا۔ترقی یافتہ قومیں ہی اعتدال کی راہ پر آتی ہیں ۔انشا ء اللہ اہل پاکستان بھی ایک اعتدال کے راستے پر آئے گا ۔ قائدؒ اقبالؒ کے راستے پر ۔قائد ؒاقبالؒ جیسے لوگ مایوسیوں میں چراغ جلانے والے ۔ اب بھی کسی نے اس قوم کو مہنگائی ،بیرورگاری اورمایوسی کی دلدل سے نکالنے کے لیے کمر کس لی ؟جی ہاں ۔ان کی کاوشوں پر رشک آتا ۔ سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان
مزید پڑھیے


گائوںمیں عید !

اتوار 14 اپریل 2024ء
امتیاز احمد تارڑ
ربع صدی ہوتی ہے۔ گائوں کو خیر آباد کہے ہوئے ،مگر دل ابھی تک وہی دھڑکتا ہے ،اس وجہ سے نہیں کہ وہاںزندگی سستی ہے بلکہ اس وجہ سے کہ میرا خمیر اسی مٹی سے اٹھا ہے۔ خوبصورت پگڈنڈیاں، سہانی گلیاں، کشادہ سڑکیں اور بازاروں کے درودیوار میری پہلی محبت ہیں۔ پرائمری سکول کی تعلیم ڈیرہ ہاشم خاں میں ٹاٹ پر بیٹھ کر حاصل کی ۔اس وقت سکول کی چار دیوار نہ تھی ،گرمیوں کی تین ماہ کی چھٹیوں میں کانٹے دار چھاڑیوں کی باڑ کاٹ کر لانا فرض عین ہوا کرتا تھا تاکہ تین مہینے سکول میں کوئی جانور
مزید پڑھیے


جماعت اسلامی کی جمہوریت

اتوار 07 اپریل 2024ء
امتیاز احمد تارڑ
نظم و ضبط کے بغیر انسان اورحیوان برابر ہیں،انسان کو اشرف المخلوقات اسی بنا پر کہا جاتا ہے کہ وہ اللہ تعالیٰ کی طرف سے دیئے گئے احکامات کوپیش نظر رکھ کر پورے نظم و ضبط کے ساتھ زندگی گزارتا ہے ۔ فرد سے لے کر اقوام تک کامیابی کا دارومدار نظم و ضبط میں ہی ہے ۔افراد میں کئی لوگ ایک ڈسپلن میں زندگی گزارتے ہیں لیکن پاکستان کی سیاسی جماعتوں میں یہ ڈسپلن تلاش کرنے کو بھی نہیں ملتا سوائے جماعت اسلامی کے ۔جمہوریت میں جماعت اسلامی کی تاریخ بڑی درخشاں ہے مگر اس کی امارت کا
مزید پڑھیے


صلہ و ستائش سے بے نیاز باہمت آدمی

اتوار 24 مارچ 2024ء
امتیاز احمد تارڑ
محدود وسائل کے باوجود محمد ی آئی ہسپتال جو کام کر رہا ہے، وہ آب زر کے ساتھ لکھنے کے لائق ہے ۔ایک عام آدمی اگر نیت کر لے کہ اس نے کے ٹوکی چوٹی سر کرنی ہے تومشکل نہیں ۔انسان پہاڑوں کو چیر کر نئی دنیا بسا سکتا ہے۔ایسے ہی محمدی آئی ہسپتال کے روحِ رواں محمد شفیق جنجوعہ اور ان کے باہمت بیٹوں نے ایک نئی دنیا تخلیق کر رکھی ہے ۔یہ ہسپتال میرے گھر کے قریب ہے ،جب کبھی ضرورت پڑتی ہے ۔تو برادرِ محترم ندیم احمد کو فون کرتا ہوں اور اسی بہانے ہسپتال کے وزٹ
مزید پڑھیے








اہم خبریں