٩٢ کے نام



تخریبی اشتراک !

اتوار 19 جنوری 2020ء
جمعہ 10 جنوری کوکوئٹہ کے علاقے سیٹلائٹ ٹائون کے قریب اسحاق آباد کی ایک مسجد میں خودکش دھماکے میں پندرہ نمازی جاں بحق اورمتعدد زخمی ہوئے۔ یہ سانحہ نماز مغرب کی ادائیگی کے دوران پیش آیا۔ دوسری صف میں کھڑے بد بخت دہشتگرد نے جسم سے بندھے بم کا دھماکا کردیا ۔یقینا مسلمان تھا، جس نے اپنے کلمہ گو مومن بھائیوں کو خون میں نہلا کر زندگی کے ساتھ اپنی آخرت بھی برباد کردی۔ ذمہ داری داعش نامی گروہ نے قبول کرلی ۔جن سے وابستہ افراد کسی دوسری دنیا کی مخلوق نہ ہیں۔افغانستان کے بعض علا قوں میں کمین
مزید پڑھیے


اپنے بچوں کی تربیت کیسے کریں؟؟؟

هفته 18 جنوری 2020ء
مکرمی ! عصر حاضر کے مسائل میں ایک بہت بڑا مسئلہ "اولاد کی تربیت کا ہے"۔ اگر اولاد کی تربیت صحیح نہج پر کر دی جائے تو یہ دنیا کے ساتھ ساتھ آخرت میں بھی نیک نامی کا ذریعہ بنے گی۔ سب سے پہلی چیز "لباس" ہے۔ بچوں کی تربیت میں لباس کا بنیادی کردار ہے۔ لباس موسم کے مطابق ہو اور ایسا ہو جس سے اسلامی تشخص کا اظہار ہو۔ گھر میں لباس وغیرہ رکھنے کے لیے مستقل جگہ بنائیں۔ بچوں کی اچھی صحت کیلئے " مصنوعی غذا " سے بچائیں۔ مثلاً چپس، چاکلیٹ ، تلی ہوئی اشیائ،
مزید پڑھیے


سکون صرف قبر میں ہے

هفته 18 جنوری 2020ء
مکرمی !اسلامی جمہوریہ پاکستان کے وزیراعظم جناب عمران خان کی جانب سے ہنرمند جوان پروگرام کی تقریب کے دوران ایک دلچسپ بات کی گئی جس میں خان صاحب نے کہا کہ سکون کی زندگی صرف قبر میں ہوگی. یہ الفاظ سن کر پہلے تو مجھے یقین نہیں ہوا کہ پاکستان کا وزیراعظم اس طرح کی گفتگو کرسکتا ہے اور پھر اْن کے اس جملے سے میں اس نتیجے پر پہنچا کہ خان صاحب عوام کو اپنی حکومت کی تلخ حقیقت سے آگاہ کر رہے ہیں یعنی اس دورے حکومت میں عوام کو گھبرانے کے علاوہ اور کچھ حاصل نہیں
مزید پڑھیے


ٹڈی دل کے تدارک کیلئے جامع منصوبہ بندی کی ضرورت

هفته 18 جنوری 2020ء
مکرمی ! نومبر 2019 میں ٹڈی دل کا چولستان سے تقریباً خاتمہ ہوچکا تھا۔ بعد ازاں 18 دسمبر کو بڑے بڑے سوارم کی شکل میں ٹڈی دل راجستھان اور صوبہ سندھ کے ڈیزرٹ سے چولستان میں داخل ہوئی جس کو کنٹرول کرنے کیلئے حکومت پنجاب نے ہنگامی صورت حال سے نبردآزما ہونے کیلئے متعلقہ محکموں کو ملوث کرکے کنٹرول آپریشنز کا سلسلہ دوبارہ شروع کردیا۔ جو اب تک بڑی کامیابی سے جاری ہیں۔ 12 جنوری 2020کو ہوائی آپریشن کے دوران ایک ناخوشگوار واقعہ بھی پیش آیا جس میں پائلٹ شعیب ملک اور انجینئر فواد بٹ طیارہ کریش ہونے کے نتیجہ
مزید پڑھیے


علامہ اقبال انڈسٹریل اسٹیٹ،خوش آئند قدم

هفته 18 جنوری 2020ء
مکرمی !علامہ اقبال انڈسٹریل اسٹیٹ ایک ایسا منصوبہ ہے جس کے ذریعے سے تین لاکھ ڈائریکٹ اور دس لاکھ ان ڈائریکٹ نوجوانوں کو روزگار کاموقع ملے گا۔گویا کم وبیش تیرہ لاکھ گھروں کا چولہا گرم ہونا شروع ہوجائے گا۔علامہ اقبال انڈسٹریل اسٹیٹ 3217 ایکڑ پر قائم کیا جا رہا ہے۔جس میں ایک ارب دالر غیرملکی سرمایہ کاری کی کمٹمنٹ آچکی ہے۔ابتدائی طور پر چینی کمپنیوں کو صنعتیں لگانے کے لئے سات سو ایکڑ زمین فراہم کی گئی ہے ،چین کے علاوہ دیگر غیرملکی سرمایہ دار بھی آنے کا عندیہ دے چکے ہیں۔ہمیں حکومت کے اس فعل کو نہ صرف
مزید پڑھیے




این آر سی کی بلا سے کیسے بچا جا سکتا ہے!

هفته 18 جنوری 2020ء
مودی حکومت نے ہندوستانی مسلمان کے سر پر صرف این آر سی کی تلوار ہی نہیں لٹکا دی ہے بلکہ یہ بھی طے ہے کہ این آر سی اب سارے ملک گیر پیمانے پر نافذ بھی کیا جائے گا۔ اس کے پیچھے دو مقصد ہیں۔ اول یہ کہ اس طرح مسلمان کا شہری حقوق ختم کرا سکو، غلامی کے درجے پر پہنچا دو۔ دوئم بی جے پی اگلے لوک سبھا چناؤ سے قبل مسلم ووٹ بینک کی قوت بالکل ختم کرنا چاہتی ہے۔ اس عمل میں این آر سی بے حد کارگر ثابت ہوگا۔ وہ کیسے! دیکھیے بی جے پی
مزید پڑھیے


بلدیاتی نظام، ترقی کا واحد راستہ!

جمعه 17 جنوری 2020ء
مکرمی !بلدیاتی انتخابات کو حقیقی جمہوریت کے آئینے سے تشبیہ دِی جاتی ہے، انتخاب کا بنیادی مقصد لوگوں کے مسائل ان کی دہلیز پر حل کرنا ہے۔ امن وامان کا قیام، تعلیم و تربیت کی سہولتیں، روزگار، سکونت اور ضروریاتِ زندگی کی فراہمی، یہ تمام امور بلدیاتی نظام کی بنیاد ہیں۔بلدیاتی نظام میں نمائندوں کا اپنے علاقہ سے منتخب ہونے کی وجہ سے وہ چوبیس گھنٹے عوام کی خدمت پر مامور رہتے ہیں۔ اس نظام کی ایک اور اہم خوبی خواتین کی انتخابات میں شمولیت ہے اہلِ علاقہ سے ہونے کی بناء پر وہ ان خواتین اُمیدواروں کا چنائو کر
مزید پڑھیے


مہنگائی کی وجہ سے خود کشی پر مجبور عوام

جمعه 17 جنوری 2020ء
مکرمی !معاشی ترقی کا شور مچانے والے شاید غریب کی چیخیں سننا ہی نہیں چاہتے کہ وہ کس حال میں جی رہے ہیں۔ ان کی صبح کس طرح ہوتی ہے اور ان کے گھروںمیں رات کو کیا قیامت کے مناظر ہوتے ہیں؟بچوںکے دودھ سے لیکر گھر کے راشن تک کے معاملات میں گھروں میں لڑائی جھگڑے عام ہوتے جارہے ہیں۔ بیس ہزار روپے ماہانہ کمانے والا شخص کس طرح اپنے گھریلو اخراجات پورے کررہا ہے؟ عوام کو آج دو وقت کی روٹی تک میسر نہیں، غربت کا یہ عالم ہے کہ پہلے لوگ اپنے بچوں کو فروخت کیا کرتے
مزید پڑھیے


گڈبائے پلاسٹک بیگز

جمعه 17 جنوری 2020ء
مکرمی ! جرمنی میں ایک تحقیق کے مطابق مائیکرو پلاسٹک(Micro Plastic)کی وجہ سے زمینی آلودگی، آبی آلودگی سے 23گنازیادہ ہوگئی ہے۔ ہمارا سیوریج سسٹم مائیکرو پلاسٹک پھیلانے کا اہم ذریعہ ہے۔ایک مطالعہ کے مطابق80فیصد سے90فیصد تک پلاسٹک سیوریج میں سلج کی صورت میں جمع ہوجاتا ہے اور یہی سیوریج کھیتوں کو فرٹیلائزر کے طور پر دیا جاتا ہے اور اسی طرح ہزاروں ٹن مائیکروپلاسٹک ہر سال زمین میں شامل ہوجاتا ہے۔مزید یہ کہ پلاسٹک کے ٹکڑوں پر بیماریاں پیدا کرنے والے بیکٹیریا اور وائرس ہوتے ہیں اور یہ پلاسٹک ماحول میں بیماریوں پھیلانے کیلئے ویکٹر کا کردار ادا کرتے
مزید پڑھیے


پنجاب میں وسائل کی منصفانہ تقسیم

جمعه 17 جنوری 2020ء
عوام کی صحت ، خوراک اور جان و مال کا تحفظ بنیادی طورپر حکومت کی ذمہ داری ہے۔ موجودہ پنجاب حکومت صحت کے معاملے میں اپنے فرائض سے پوری طور پر آگاہ ہے اور اس شعبے میں اپنی پوری توانائیاں صرف کر رہی ہے۔ ماضی میں ہسپتالوں کی حالت زار کسی سے ڈھکی چھپی نہیں رہی۔ غفلت حکومت کی ہو یا ڈاکٹروں کی بھگتنا غریب عوام کوہی پڑتا ہے۔ گزشتہ دورحکومت میںگورنمنٹ ہسپتالوں میں ایک ہی بیڈ پر کئی مریض ہوتے تھے اور پینے کا صاف پانی بھی میسر نہیں تھا۔صفائی کے ناقص انتظامات پر بھی ہسپتالوں کی انتظامیہ نے
مزید پڑھیے