BN

عدنان عادل


ہماری قوتِ مدافعت


جب سے کورونا وبا آئی ہے پاکستان کے دیہات میںمعمول کے مطابق زندگی کا کاروبار چل رہا ہے۔کاشتکار کھیتوں میںکام کررہے ہیں۔گندم کی فصل پک کر تیار ہوئی اوراب تک بیشتر رقبہ پرسے کسان اسے کاٹ چکے ہیں۔ بازاروں میں دیہاتوں سے سبزیاں آرہی ہیں۔ ہر جگہ دودھ کی فراہمی جاری ہے۔ گوشت بھی دستیاب ہے۔ شہر بند ہیں لیکن دیہات کُھلے ہوئے ہیں۔ٹھیک ہے کہ دیہات میں کورونا کے ٹیسٹ نہیں کیے گئے اس لیے اعداد و شمار دستیاب نہیں لیکن اگر کوئی وبا لوگوں کو متاثر کرتی تو اس کی علامات توظاہر ہوجاتیں۔ دو مہینے ہوگئے کسی
بدھ 06 مئی 2020ء

ٹرمپ کی چین پرچڑھائی

اتوار 03 مئی 2020ء
عدنان عادل
امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کورونا وبا کاسارا نزلہ چین پر گرا رہے ہیں۔وبا کے باعث امریکہ ایک بدترین مصیبت میں مبتلا ہے۔ اس وائرس سے اتنی اموات ہوچکی ہیں جو ویت نام جنگ سے بھی زیادہ ہیں۔ صدر ٹرمپ کا کہنا ہے کہ ان کے پاس ثبوت ہیں کہ کورونا وائرس چینی شہرو وہان کی وائرس پر تحقیقات کرنے والی لیبارٹری سے خارج ہوا۔ یعنی یہ کوئی عام وائرس نہیں ہے جو کسی جانور سے انسانی معاشرہ میں داخل ہوا ہو۔دوسری طرف ان کے اپنے ملک کی انٹیلی جنس ایجنسی سی آئی اے کا موقف بالکل مختلف ہے۔ اسکا کہنا
مزید پڑھیے


کورونا اورمتبادل طریقہ علاج

بدھ 29 اپریل 2020ء
عدنان عادل
دنیا میںکورونا وبا کاخوف بہت پھیلا دیا گیا ہے۔حالانکہ اب تک کے اعداد و شمار کی تحقیق سے صرف یہی پتہ چلا ہے کہ اس مرض سے ہونے والی اموات کی تعداد اتنی ہے جتنی عام انفلوئنزا سے ہوتی ہیں۔یہ اس سے زیادہ مہلک بیماری نہیں ہے۔ اس وبا کا شکار ہونے والے لوگوں کی بھاری اکثریت صحت یاب ہوجاتی ہے۔البتہ یہ بہت تیزی سے پھیلنے والا مرض ہے ۔اسکا صرف یہ پہلو تشویش کاباعث ہے۔ چونکہ یہ وائرس جانوروں کی دنیا سے نکل کر اب انسانی معاشرہ میںداخل ہوگیا ہے ہمیں اس کے ساتھ رہنا ہے‘ اس لیے ہمیں
مزید پڑھیے


تیل کی مندی ہمارے لیے نہیں

اتوار 26 اپریل 2020ء
عدنان عادل
دنیا میں خام تیل کا سیلاب آیا ہوا ہے۔ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت بیس سال کی کم ترین سطح پر ہیں۔لیکن ایک سے زیادہ وجوہ کی بنا پر پاکستان اس صورتحال سے فائدہ اٹھانے کی پوزیشن میں نہیں۔ یوں بھی یہ ایک عارضی مندی ہے جو چند ماہ بعد ختم ہوجائے گی۔ گزشتہ ہفتہ تاریخ کا انوکھا واقعہ ہوا کہ امریکہ میں خام تیل کی قیمت چند روز تک منفی میں چلی گئی۔ یعنی تیل بیچنے والے کہہ رہے تھے کہ ہم سے رقم لے لو اور تیل لے جاؤ۔ وجہ یہ تھی کہ امریکہ میں جن بڑے
مزید پڑھیے


حقیقت پسندانہ لاک ڈاؤن

بدھ 22 اپریل 2020ء
عدنان عادل
تقریباًایک ماہ سے پورے ملک میں ایک نیم کرفیو کی صورتحال ہے۔لوگوں کی بڑی تعداد گھروں میں محصور ہے۔طویل لاک ڈاؤن ان کے اعصاب پر بھاری پڑ رہا ہے۔بہت سے لوگ کام کاج پر لوٹنا چاہتے ہیں۔ محنت مشقت کرکے اپنی روزی کمانا چاہتے ہیں۔ حقیقت پسندی کا تقاضا ہے کہ حکومت اب معاشی سرگرمیاںمکمل بحال کرنے کی اجازت دے۔ کورونا وبا نے اب تک پاکستان میں بڑے پیمانے پر نقصان نہیں پہنچایا۔ اعداد و شمار بتاتے ہیں کہ ہمارے ملک میں کورونا سے بیمار ہونے والے لوگوں میں مرنے والوں کی شرح صرف ڈیڑھ فیصد ہے۔ ان میں وہ
مزید پڑھیے



امریکہ‘ چین کی سرد جنگ

اتوار 19 اپریل 2020ء
عدنان عادل
ایسے وقت جب دنیامہلک کورونا وبا سے مقابلہ میں مصروف ہے عالمی سیاست میںامریکہ اور چین کے درمیان کشیدگی بڑھ رہی ہے۔ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ دنیا کے دو بڑے ملک مل جل کر اس وبا سے نپٹنے میں ایک دوسرے کا ساتھ دیتے اور دنیا کے دوسرے ملکوںکی بھی مدد کرتے لیکن امریکی حکومت چین کے ساتھ محاذ آرائی کے راستے پر گامزن ہے۔آثار یہ ہیں کہ دونوں ملکوں کے درمیان باقاعدہ ایک سرد جنگ کا آغاز ہوچکا ہے۔ کورونا وبا سے پہلے ہی امریکہ اور چین کے باہمی تعلقات خرابی کی طرف گامزن تھے‘ دونوں ملک تجارتی
مزید پڑھیے


معیشت کی بحالی

بدھ 15 اپریل 2020ء
عدنان عادل
جیسا کہ اندازہ تھا کہ کورونا وبا سے بچنے کے لیے کاروبار زندگی پرجوبندشیں لگائی جائیں گی ان کا منفی اثر معیشت پر پڑے گا اور لوگوں کی ایک بڑی تعداد روزگار سے محروم ہوجائے گی وہی مسائل اب ہمیں درپیش ہیں۔ اب تک اس مہلک وبا سے جو معاشی نقصان پہنچ چکا ہے وہ ہماری پہلے سے نحیف و نزار معیشت کو مزید کمزور کردینے کو کافی ہے۔ ہمیں وبا کو کنٹرول کرنے کے اقدامات اور معیشت کو چلانے میں ایک توازن قائم کرنا ہوگا۔ پاکستان کی معاشی ترقی گزشتہ دو برسوں سے سست چل رہی تھی۔ توقع تھی
مزید پڑھیے


اشرف غنی کے تاخیری حربے

اتوار 12 اپریل 2020ء
عدنان عادل
اشرف غنی طالبان قیدیوں کی رہائی اور طالبان سے مصالحتی عمل میں تاخیری حربے استعمال کررہے ہیں، جس کے باعث گزشتہ ہفتہ افغان طالبان نے کابل حکومت کے ساتھ قیدیوں کی رہائی پر بات چیت ختم کردی اور ان کا وفد افغان دارلحکومت سے واپس قطر روانہ ہوگیا۔تئیس مارچ کو امریکی سیکرٹری آف اسٹیٹ مائیک پومپوکابل گئے تھے جہاں انہوں نے اشرف غنی کو صاف صاف بتادیا تھا کہ وہ طالبان سے مصالحتی معاہدہ پر عملدرآمد کریں ورنہ امریکہ یکطرفہ طور پر اپنی تمام افواج افغانستان سے نکال لے گا اور انکی حکومت کو ایک ارب ڈالر کی وہ امداد
مزید پڑھیے


ڈاکٹروں‘ نرسوں کی قلت

بدھ 08 اپریل 2020ء
عدنان عادل
ہمارے ملک میں علاج معالجہ کے نظام میں بے شمار خامیاں‘ کمزوریاںہیں جو سب کو معلو م ہیں لیکن کورونا وبا کے باعث یہ زیادہ اجاگر ہوگئی ہیں۔ سرکاری ہسپتالوں کے ڈاکٹر احتجاجی مظاہرے کررہے ہیں کہ انفیکشن سے حفاظت کے لیے خود ان کے پاس ضروری حفاظتی لباس اور دیگر سامان نہیں ہے۔ بڑے پیمانے پر کسی ایمرجنسی سے نپٹنے کی غرض سے صوبائی حکومتیں بڑے شہروں میںعارضی فیلڈ ہسپتال بنارہی ہیں کیونکہ مستقل ہسپتالوں کی گنجائش بہت کم ہے۔ لیکن ایک اہم سوال یہ ہے کہ ان عارضی ہسپتالوں میں کام کرنے کے لیے پوری تعداد میں
مزید پڑھیے


مقبوضہ کشمیر میں بھارتی آبادکاری

اتوار 05 اپریل 2020ء
عدنان عادل
ایسے وقت میں جب ساری دنیا کورونا وبا سے مقابلہ میں مصروف ہے ‘ بھارتی ریاست نے اپنی روایتی مکاری سے کام لیتے ہوئے مقبوضہ جمو ں کشمیر ریاست کو ہڑپ کرنے کی طرف ایک اور بڑا قدم اُٹھایا ہے۔ چند روز پہلے بھارتی حکومت نے ایک نیا ڈومیسائل قانون جاری کیا جس کے تحت مقبوضہ ریاست میں بھارت کے دیگر باشندوں کو بڑے پیمانے پر آباد کیا جاسکے گاجیسے اسرائیل نے فلسطینی علاقوں میں دنیا بھر کے یہودیوں کو آباد کیا ہے۔مقصد یہ ہے کہ جموں کشمیر ریاست میں زمینی حقائق تبدیل کردیے جائیں‘ اُسکے کشمیری تشخص ‘اُسکی مخصوص
مزید پڑھیے