Common frontend top

ذوالفقار چوہدری


جناب وزیر اعلیٰ! کچھ نظر کرم ادھر بھی۔۔۔


گزشتہ دنوں چند روز جنرل ہسپتال کے ہڈی و جوڑ وارڈ میں گزارنا پڑے تو یہ بات سمجھ آئی کہ بڑے بزرگ ’’خدا تجھے ہسپتال اور کچہری سے بچائے رکھے‘‘ دعا کیوں دیتے تھے۔آئین میں تمام شہریوں کو مفت تعلیم صحت اور روزگار کے یکساں مواقع فراہم کرنے کی ضمانت تو لکھ دی گئی حکومت صحت کارڈ کے ذریعے 10لاکھ تک مفت علاج کا ڈھنڈورا پیٹتے بھی نہیں تھکتی۔ مگر غریب کس طرح ہسپتال میں موت کے لئے دعائیں مانگتے ہیں یہ دیکھنے کی فرصت حکمرانوں کو ہے نا ہی ہسپتال انتظامیہ کو۔صوبائی دارالحکومت لاہور کی آبادی دو کروڑ کے
جمعه 14 جولائی 2023ء مزید پڑھیے

سرکاری اداروں کی ترقی اور ملازمین کی بہبود

جمعه 07 جولائی 2023ء
ذوالفقار چوہدری
تھیو ڈور روز ویلٹ نے کہا تھا بہترین ایگزیکٹو وہ ہوتا ہے ،جس میں اتنی سمجھ ہو کہ وہ جو کرنا چاہتا ہے اس کے لئے باصلاحیت اور بہترین ٹیم ناصرف منتخب کرے بلکہ ٹیم کو ٹارگٹ دے کر اس کے کام میں بلا جواز مداخلت اور روک ٹوک سے بھی اجتناب کرے۔ باصلاحیت قیادت کی پہچان میکس بی ویل نے یہ بتائی کہ وہ نہ صرف راستہ جانتی ہے بلکہ اس راستے پر چلتے ہوئے دوسروں کو بھی راستہ دکھاتی ہے۔اب اسے ستم ظریفی کہیے یا پاکستانیوں کی بدقسمتی کہ پاکستان میں جو بھی حکومت آئی صرف اپنے اقتدار
مزید پڑھیے


فوڈ اتھارٹی کی دستک!!

جمعه 23 جون 2023ء
ذوالفقار چوہدری
تبدیلی دلفریب نعروں اور خوش کن ترانوں سے نہیں عزم صمیم اور کچھ کر گزرنے کے ولولہ سے بھی لائی جا سکتی ہے۔ اس کے لئے اختیار اور عہدے سے زیادہ لگن اور ہر ممکن حد تک بہتری کی کوشش کا جنوں ہونا چاہیے۔یہ سبق سکھایا گزشتہ روز صبح دس بجے ایک نوجوان کی دستک نے۔دروازے پر بیس پچیس برس کے نوجوان کا کہنا تھا کہ ہم ڈی جی فوڈ اتھارٹی کے حکم پر گھر گھر سے دودھ کے نمونے حاصل کر رہے ہیں تاکہ اس بات کاپتہ لگایا جائے کہ آپ کو ملاوٹ سے پاک خالص دودھ مل رہا
مزید پڑھیے


روسی تیل: امریکی ڈالر پر یوآن کی برتری

جمعه 16 جون 2023ء
ذوالفقار چوہدری
افلاطون نے کہا تھا ملک و قوم کی خدمت کے لئے سوچنے کی صلاحیت سے زیادہ جرا ت عمل ہونی چاہیے۔نوم چومسکی ڈپلومیسی کو تھری سیز (3cs)کانفیلکٹ ،کمپیٹیشن اور کوآپریشن کی جنگ قرار دیتا ہے۔ اس جنگ میں ریاستیں عسکری کے بجائے ڈپلومیسی کے ہتھیار برتتی ہیں۔اس لحاظ سے دیکھا جائے تو روس کے تیل کے جہاز کا پاکستانی بندرگاہ پر پہنچنا بلاشبہ ایک نئے دور کا آغاز ہے۔ایسا اس لئے کہ پاکستان نے روسی تیل کی ادائیگی امریکی ڈالر کی بجائے چینی یوآن میں کی ہے۔ جو بدلتی کیثر الجہتی دنیا کی صورت میں ایک نوید ہے۔روس کے
مزید پڑھیے


ہسپتال یا بچوں کا مقتل!

جمعه 02 جون 2023ء
ذوالفقار چوہدری
حادثہ کیا ہے غیر متوقع ناگہانی صورتحال ! یہ قدرتی آفت کی صورت میں بھی ہو سکتی ہے اور انسانی غفلت کے باعث بھی۔ترقی یافتہ ممالک نے تو قدرتی آفات کے اسباب و علت پر غور و فکر اور تحقیق کر کے اگر تدارک ممکن نہیں تب بھی کم از کم جانی و مالی نقصان کو یقینی بنا لیا ہے۔ برادر ملک ترکی میں حالیہ تباہ کن زلزلے میں ہزاروں افراد لقمہ اجل بنے مگر طیب اردوان کی حکومت نے ریلیف اور بحالی کے لئے ہی مثالی اقدامات نہیں کئے بلکہ سینکڑوں بلڈرز کو بھی گرفتار کر لیا کیونکہ انہوں
مزید پڑھیے



اسلاموفوبیا کے بعد سینو اور روسوفوبیا

جمعه 26 مئی 2023ء
ذوالفقار چوہدری
یہ آفاقی سچائی ہے کہ طاقتور کبھی کسی اخلاقی یا قانونی ضابطے کا تابع ہونا قبول نہیں کرتا جبکہ طاقت کا خاصہ یہ ہے کہ افراد ہوں یا معاشرے یہ اپنے مراکز تبدیل کرتی رہتی ہے۔ فرق صرف اتنا ہے کہ افراد میں یہ ارتقائی عمل مہینوں برسوں جبکہ معاشروں میں دھائیوں اور صدیوں پر محیط ہوتا ہے۔ انسانی تاریخ کرۂ ارض پر عظیم الشان سلطنتوں کے عروج و زوال کی گواہ ہے۔ یونانی جو دنیا فتح کرنے نکلے تھے آج دنیا کے نقشہ پر ان کا وجود وقت نے عبرت بنا دیا ہے۔فارس کے شاہ نے عربوں کو سوسمارکھانے
مزید پڑھیے


انا کا انا سے ٹکرائو

جمعه 19 مئی 2023ء
ذوالفقار چوہدری
جمہوری نظام میںسیاسی حکومت ریاست کا انجن تو ہو سکتی ہے خود ریاست نہیں۔ریاست کے اجزا ء ترتیبی میں بنیادی حیثیت اداروں کی ہوتی ہے جو آئین کی طے شدہ حدود میں ریاستی جسم کو فعال اور توانا رکھنے کے لئے اپنے فرائض انجام دیتے ہیں اس لحاظ سے حکومت اور ریاستی اداروں کا کردار کلیدی ہوتا ہے ،حتمی نہیں۔ حکومت کرنے والی پارٹی کی قیادت یہاں تک کہ اداروں کی قیادت کی مدت متعین ہوتی ہے جبکہ ریاست اور ریاستی ادارے دائمی ہوتے ہیں۔ جرمن فلاسفر نے کہا تھا کہ ریاست کی حفاظت اس کی فوج کرتی ہے
مزید پڑھیے


سیاست میں فریب اور خود فریبی!

جمعه 12 مئی 2023ء
ذوالفقار چوہدری
لینن نے کہا ہے ’’لوگ ہمیشہ سے سیاست میں فریب اور خود فریبی کا شکار رہے ہیں اور ہمیشہ ہی رہیں گے‘‘۔ سیاست میں فریب کیا ہے یہ بر ٹرینڈرسل نے یہ سمجھا دیا۔’’ایک ایماندار سیاست دان کو جمہوریت اس وقت تک برداشت نہیں کرے گی جب تک کہ وہ بہت زیادہ احمق نہ ہو۔‘‘ وہ رسا چغتائی نے کہا ہے نا: دل میں آباد ہیں جو صدیوں سے ان بتوں کو کہاں خدا لے جائے سیاست کے دل میں فریب جو صدیوں سے آباد ہے وہ ہر دور میں کوئی نہ کوئی احمق تلاش کر ہی لیتا ہے اور کرتا بھی
مزید پڑھیے


صارفین کے نہلے پر لیسکو کا دہلا!!

جمعه 05 مئی 2023ء
ذوالفقار چوہدری
پاکستانیوں کی معمول کی گفتگو کا بحیثیت مجموعی تجزیہ کیا جائے تو عیب گوئی ہمارا قومی شغل محسوس ہوتا ہے۔بات مہنگائی سے شروع اور حکمرانوں، اداروں اور سرکاری اہلکاروںکی کرپشن پر ختم ہو تی ہے۔کوئی ریونیو کے پٹواری کے اربوں کے اثاثوںکو حرام کی کمائی کہتا ہے تو پٹواری کے پاس کسٹمر اور ایکسائز کے محکمے کے اہلکاروں کے آمدن سے زائد اثاثوں کی فہرست ہو گی۔پولیس والا میٹر ریڈر کی کوٹھیاں گنوا تا ہے ۔ یہاں اپنے بجائے دوسروں کی آنکھ کا تنکاشہتیر نظر آتا ہے! اب اس قسم کے خبط کے شکار سماج میں راقم پارسائی کا دعویٰ تو
مزید پڑھیے


پاکستانی سیاست کا کمال

جمعه 21 اپریل 2023ء
ذوالفقار چوہدری
ترکی کے معروف دانشور اور ناول نگار مہمت مرات الڈان نے شاید پاکستان کی سیاست دیکھ کر ہی کہا تھا’’ سیاست دانوں کے بجائے بندروں کو ملکوں پر حکومت کرنے دیں۔ کم از کم وہ صرف کیلے ہی چرائیں گے! مہمت مرات الڈان کی مایوسی اور ناامیدی کے باوجود ولیم جے فیڈرر کا ماننا ہے کہ ملک کو قانون کے ذریعے کنٹرول کیا جاتا ہے۔ قوانین کو سیاستدان کنٹرول کرتے ہیں۔سیاستدانوں کو ووٹر کنٹرول کرتے ہیں۔ ووٹروں کو رائے عامہ کے ذریعے کنٹرول کیا جاتا ہے۔ رائے عامہ کو میڈیا ، تعلیم اور انٹرنیٹ کے ذریعے کنٹرول
مزید پڑھیے








اہم خبریں