BN

عبدالرفع رسول


لداخ میں چین کی تازہ پیش قدمی


چین اور بھارت کے فوجیوں کے مابین لداخ میں تازہ جھڑپوں کے بعد سے چینی فضائیہ کے طیارے لائن آف ایکچوول کنٹرول (ایل اے سی)کے آس پاس فضا میں گشت کر رہے ہیں جس سے یہ اندازہ لگانامشکل نہیںکہ چین اور بھارت کے مابین حالات کشیدہ ہیں۔ 29اور 30اگست کی درمیانی شب کوچین نے لداخ میںتازہ پیش قدمی کرتے ہوئے لداخ کے ایک بڑے حصہ کواپنے کنٹرول میں لیا ہے۔ بھارتی اخبارTHE HINDU)) کے مطابق اب تک چین نے لداخ میں ایک ہزارمربع کلومیٹرپرقبضہ جمایاہے ۔ بھا رتی فوج کے بیان کے مطابق چین کے ساتھ کشیدگی کم کرنے کے مقصد
هفته 05  ستمبر 2020ء

بھارت کی درندہ صفت فوج

جمعرات 03  ستمبر 2020ء
عبدالرفع رسول
گذشتہ سات دہائیوں سے جاری ارض کشمیرپرحق خودارادیت کے حصول کیلئے برسر جدوجہد ملت اسلامیہ کشمیرکی بے پناہ جانی و مالی قربانیوں سے عبارت تحریک کو کچلنے کیلئے جس بڑے پیمانے پر یہاں فوجی بربریت جاری ہے۔ دنیامیں اس کی مثال نہیں ملتی۔ بھارت یہاں کی نوجوان نسل کو طاقت کے بل پر دیوار کے ساتھ لگا رہا ہے،ظلم وزیادتیوں کے باعث اعلیٰ تعلیم یافتہ نوجوانوں کو اس کے سواکوئی راستہ نہیں بچتاکہ وہ جنگلوں کارخ کرکے عسکریت کا راستہ اختیار کریں۔ اگرچہ1947سے ہی مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی جانب سے بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزیاں اور انسانی حقوق
مزید پڑھیے


جموں وکشمیر میں 3ہزار سے زائد گمنام قبریں!

بدھ 02  ستمبر 2020ء
عبدالرفع رسول
گمشدہ افراد کے لواحقین کی تنظیم کی جانب سے گمنام قبروں کے اس وسیع سلسلے کا انکشاف ہونے کے بعد اے پی ڈی اے نے انٹرنیشنل پیپلز ٹریبونل آن ہیومن رائٹس اینڈ جسٹس کے نام سے عوامی تنظیم کے قیام کا اعلان کیا جس کے ارکان میں کیلی فورنیا یونیورسٹی میں انتھرویولوجی کی پروفیسر ڈاکٹر انگنا چتر جی بھارت میں انسانی حقوق کے علمبردار گوتم نولکھا جنہیں آج کل کشمیر کے داخلے پر حکومت ہند نے پابندی عائد کر رکھی ہے اور سری نگر کے پرویز امروز شامل ہیں نے ایسے خوفناک واقعات پر جنوبی افریقہ کی طرز پر ٹروتھ
مزید پڑھیے


بھارتی بربریت اور کشمیری مائیں!

منگل 01  ستمبر 2020ء
عبدالرفع رسول
کشمیر پرعالمی سطح کی سرد مہری اورعدم توجہی کے باوجودعالمی ضمیرکوجگانے کے لئے ہرسال 30اگست کوپوری دنیاکے ساتھ ساتھ کشمیرمیں بھی گمشدگان کا عالمی دن منایاجاتاہے ۔گمشدگی ایک کیفیت ہے مگرقومی اعتبارسے ہمارے ہاں تو یہ ایک سانحہ عظیم بن چکاہے اورمجموعی طورپرہم اہل کشمیرایک گمشدہ قوم ہیں ۔ 1947سے آج تک ہم کشمیری مسلمان آہوں،سسکیوں اور اشکوں کے سیلاب کے رقعت آمیز مناطر کے ساتھ یہ صدائیں بلندکرتے ہوئے اپنے آپ کوتلاش کرتے پھرتے ہیںکہ آخرہماراقصورہے کیا ؟کیوں نہیں ہمیں بین الاقوامی وعدوں کے مطابق اپنے مستقبل کافیصلہ کرنے نہیں دیا جاتا۔ آخرہم بھی توانسان ہی ہیںمگراس کے باوجود
مزید پڑھیے


شہادت حسین اورعصر حاضر کی اسلامی تحریکیں

اتوار 30  اگست 2020ء
عبدالرفع رسول
بنظر غائردیکھاجائے توصاف پتہ چل جاتا ہے کہ عصر حاضر کی اسلامی تحریکیں آج انہی حالات سے دوچار ہیںجوسیدناحسین ؓکے کارروان حق کے ساتھ پیش آئے۔القاعدہ ، تحریک طالبان افغانستان،مصرکی اخوان المسلمون ،فلسطین کی حماس اور تحریک آزادی کشمیرسے لوگ ہمدردیاں توڑ کر کوفیوں کی طرح ایک ایک کرکے دورہوتے چلے جا رہے ہیں اور انہیں چیرپھاڑ کے لئے بے رحم دشمن کیلئے چھوڑ رہے ہیں۔مسلمانان عالم کی ان تحریکات سے عملی طورپربیزاری کاعالم دیکھ کرطاغوت اوراس کے آلہ کارشہہ پاچکے ہیں اوروہ نہایت آسانی کے ساتھ ان تحریکوں سے وابستہ گان کو ایک ایک کرکے قتل اوران تحریکوں کو
مزید پڑھیے



خونِ شہیداں‘ صبح آزادی کی نوید (2)

بدھ 26  اگست 2020ء
عبدالرفع رسول
جامع مسجد لال پورہ وادی لولاب جہاں میں کئی برس تک خطبہ جمعہ دیتارہا ۔اس دوران اس خاکسارنے بے شمار شہدائے کرام کا جنازہ پڑھایا۔ یہ اس لئے بھی کہ علاقے کاتھانہ لال پورہ میں ہی واقع تھا۔جس کے باعث پورے علاقے میں جہاں کہیں قابض بھارتی فوج اورمجاہدین کے مابین معرکہ آرائی ہوتی اوراس معرکہ آرائی میں مجاہدین شہیدہوجاتے توان شہداء کوتھانہ لال پور پہنچایا جاتاتھا۔ ایک دن دو شہداء کاجنازہ لایا گیا، سینکڑوں کی تعدادمیں علاقے کے لوگوں کی موجودگی میں اس خاکسار نے ان شہدائے کرام کاجنازہ پڑھایا،لیکن مسئلہ یہ تھاکہ ان میں سے ایک کاجسد خاکی
مزید پڑھیے


خونِ شہیداں‘ صبح آزادی کی نوید

منگل 25  اگست 2020ء
عبدالرفع رسول
آج جس موضوع پرخامہ فرسائی کر کے سعادت حاصل کرناچاہتاہوں اس کاعنوان ہے ’’شہدائے کشمیرکی کرامات اورمیں چشم دید گواہ ہوں‘‘ یہ کشمیرکے ان پاکباز شہدائے کرام کی کرامات کا تذکرہ ہے جو ملت اسلامیہ کے ماتھے کا جھومر ہیں۔یہ وہ عظیم سے عظیم ترنفوس ہیں کہ جنہوں نے اپنا آج ملت اسلامیہ کشمیر کے کل پر قربان کیا، جنہوں نے اپنی خواہشات اور خوابوں کو آنے والی نسلوں کی خواہشات اور خوابوں کے لیے تج دیا،مقتل میں آخری دم تک کھڑے رہے اور میدان کارزار میں دشمن ہندو بنیاکامردانہ وار مقابلہ کرتے ہوئے سرخرو ہو کر رونق افروز جنت
مزید پڑھیے


توہین رسالت کے خلاف کشمیرمیں ہمہ گیراحتجاج

اتوار 23  اگست 2020ء
عبدالرفع رسول
یوں تو حق و باطل،کفرواسلام کی کشمکش ہر دور میں جاری رہی ہے۔ لیکن گزشتہ چند برسوں سے بھارت میں اس حوالے سے مزید شدت آگئی ہے اور کافرانہ قوتوں کی طرف سے بھارتی مسلمانوں کو نشانہ بنایا جا رہاہے پہلے انہیں سیاسی ، اقتصادی طور پر کمزور کیا ، اور اب ان کے منبع ومرکز کی توہین پروہ اتر آئے ۔جمعہ 21 اگست 2020ء کو وادی کشمیراورجموں کے مسلم اکثریتی علاقے ابل پڑی اور اسلامیان جموںو کشمیر نے اس طوفان بدتمیزی کے خلاف احتجاج کیا۔ بھارت کا سنگھ پریوارسمجھ بیٹھاہے کہ ایسے مسلمان جو بھارت میں جس
مزید پڑھیے


کمزور بنیادیں

هفته 22  اگست 2020ء
عبدالرفع رسول
یہ مال ودولت دنیا ، یہ رشتہ وپیوند بتان وہم گماں ،لا الہ الااللہ (اقبالؒ) پاکستان گلاپھاڑ کربلا رہاہے کہ عرب حکمرانوں کشمیر کے حوالے سے مبنی برانصاف موقف پر پاکستان کے ساتھ کھڑے کیوں نہیں ہورہے اور اپنے طرزعمل سے بھارت کے حوصلے کیوں بڑھا رہے ہو لیکن تادم تحریرپاکستان کی پکارصدابصحرا ثابت ہو رہی ہے ۔دراصل بات یہ ہے کہ جب مسلمان ریاست ،سلطنت یامملکت کے حکمران عیاشیوں میں پڑجاتے ہیں توپھران کاسینہ اس قدر سنگ ہوجاتاہے کہ امہ کادرد دیکھ کربھی ٹس سے مس نہیں ہوتا۔ پھر فلسطین کے کوچے ہوں یاسری نگرکی گلیاںان میں مظلوم مسلمانوں کاجتناخون بھی بہے
مزید پڑھیے


بنگلورسے جموںتک شرمناک گستاخانہ مہم

جمعرات 20  اگست 2020ء
عبدالرفع رسول
13اگست سے 16اگست2020 ء تک ایک ہی ہفتے کے دوران تواتر کے ساتھ بنگلورسے جموں تک سید الانبیاء والمرسلین صلی اللہ علیہ وسلم کی ذات اقدس کے حوالے سے نا پاک اور شرمناک مہم جوئی کی جسارت کی گئی۔یہ دراصل بھارت میں ہندوتواکے نظریئے کی اسلام دشمنی اور طویل المیعادمنصوبہ بندی کا حصہ ہے کیونکہ بھارت یہ سمجھتا ہے کہ جب تک مسلمان اپنے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی ذات اقدس سے عقیدت اور محبت کا اعلیٰ معیار برقرار رکھے ہوئے ہیں ان کے اندر سے اسلامی غیرت ودینی حمیت کھرچی نہیںجا سکتی ہے اور جب تک مسلم
مزید پڑھیے